ATBAF ABRAK

( افتاب اکبر )

Mang laita hai roz hi sansain

urdu poetry sad free download and share on whatsaap image

ایک جاں تھی جو تم پہ وار چلے
ہم تو یوں زندگی گزار چلے

مانگ لیتے ہیں روز ہی سانسیں
دیکھئے کب تلک ادھار چلے

یہ صلہ ہے کسی پہ مرنے کا
وہ ہمیں بے رخی سے مار چلے

ہے محبت قدم قدم ٹھوکر
ہم بھی اٹھ اٹھ کے بار بار چلے

تھا مرا شوق اپنی رسوائی
جاتے جاتے بھی پھر پکار چلے

وہ نبھاتا نہیں یہاں ابرک
تیری ضد ہے کہ ساتھ پار چلے

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اتباف ابرک