ATBAF ABRAK

( افتاب اکبر )

Dhawa nahi umeed nahi rakhtay yaqeen hain

Dhawa nahi umeed nahi rakhtay yaqeen hain

دعوی نہیں، امید نہیں، رکھتے یقیں ہیں
ہم پھر سے اسی کوچہِِ فانی میں ملیں گے

…………… … اتباف ابرک